ایڈیٹوریل میٹنگز

پروڈکشن کے عمل کا پہلا قدم خبر کا اچھا آئیڈیا ہے۔ ادارتی میٹنگز میں پروڈیوسر اور تحقیق کار یہ بتا سکتے ہیں کہ اس آئیڈیا کو قابلِ عمل کیسے بنایا جا سکتا ہے۔ اگر آپ کسی خبر کو ایک یا دو فقروں میں بیان نہیں کر سکتے تو شاید یہ اچھی خبر نہیں ہے۔

ہر پروگرام یا ویب ٹیم کی ادارتی میٹنگز میں نئے خیالات پر بات ہوتی ہے اور انھیں منظور یا مسترد کیا جاتا ہے۔

بطور پروڈیوسر یا تحقیق کار، آپ سے توقع ہوتی ہے کہ آپ ان میٹنگز میں اچھی تجاویز لے کر آئیں۔ اپنا آئیڈیا پیش کرنے کی اچھی حکمتِ عملی کا فائدہ یہ ہو گا کہ آپ کو اپنے خیال کو عملی جامہ پہنانے کا زیادہ بہتر موقع ملے گا۔

تیاری

میٹنگ میں جانے سے پہلے دیگر ممالک سے آئی ہوئی اور مقامی ڈائری پڑھیں۔ ان میں سے بعض چیزیں تمام بی بی سی سے شیئر کی جاتی ہیں جب کہ بعض چیزیں صرف آپ کے پروگرام یا سائٹ سے متعلق ہوں گی۔

یہ معلوم کریں کہ اس خبر کے بارے میں معلومات کہاں سے حاصل ہوں گی۔ آپ کو اس دن کے ایجنڈا پر موجود ہر خبر کا کم از کم خاکہ معلوم ہونا چاہیے۔ اس کا فائدہ نہ صرف یہ ہو گا کہ آپ بحث میں زیادہ بہتر طریقے سے حصہ لے سکیں گے بلکہ ہو سکتا ہے کہ آپ ہی سے کوئی خبر کرنے کو کہہ دیا جائے۔

ادارتی میٹنگ میں یہ نہ پوچھیں کہ یہ خبر کس بارے میں ہے۔ آپ یہ تحقیق اپنے طور پر کر سکتے ہیں۔

لیکن صرف اندرونی ماخذات پر انحصار نہ کریں۔ اس بات کو یقینی بنائیں کہ آپ نے اس دن کی اہم خبروں اور اپنے مخصوص شعبے کی خبروں کے بارے میں پڑھ رکھا ہو۔ روایتی میڈیا کے علاوہ بلاگز اور سوشل میڈیا کا بھی جائزہ لیں۔

اگر آپ میٹنگ کی قیادت کر رہے ہیں تو دوسروں کی بھی سنیں اور تخلیقی بحث کا موقع دیں۔ تاہم اس بات کا بھی دھیان رکھیں کہ اگربحث نتیجہ خیز ثابت نہیں ہو رہی تو کب آگے بڑھنا ہے۔

کسی خبر کے بارے میں اس کا آئیڈیا پیش کرنے والے کی معلومات اہم ہیں، لیکن آپ کو معروضی رہنے کی ضرورت ہے۔ ورنہ پھر تخلیقی صلاحیت دب کر رہ جائے گی کیوںکہ ہر کوئی یہی سوچے گا کہ جو ماہر بتا رہا ہے وہی حرفِ آخر ہے اور وہ اس کے بارے میں اختلافِ رائے کرنے سے کترائے گا۔

کب بولنا چاہیے

اکثر میٹنگز کا ایک مخصوص ڈھانچہ ہوتا ہے اور اس کے سربراہ کو یہ بات واضح کرنی چاہیے کہ کب نئے خیالات سننے کا وقت ہے۔

بی بی سی ریڈیو فور کے پروڈیوسر سیرین بینز کہتے ہیں: ’اگر آپ نئے ہیں اور آپ کی توجہ صرف اپنی خبر پر مرکوز ہے تو آپ بحث میں خاطر خواہ حصہ نہیں لے سکیں گے۔ نئی خبروں کے بارے میں سوچنا ضروری ہے لیکن دوسرے لوگوں کے خیالات و تصورات کی نشو و نما میں مدد دینا بھی قابلِ قدر ہے۔

’اگر آپ کو کسی موضوع کے بارے میں معلومات نہیں ہیں تو اس کے بارے میں توجہ سے سنیں۔ ہو سکتا ہے کہ آپ اس کے بارے میں کوئی نئی بات پیش کر سکیں۔ بعض اوقات وہ لوگ جو سمجھتے ہیں کہ وہ کسی مخصوص خبر کے بارے میں سوچ رہے ہیں، ان سے کوئی اہم بات نظر انداز ہو جاتی ہے۔‘

زبردست آئیڈیا؟

پروگرام ٹوڈے کے سابق ایڈیٹر سیری ٹامس کہتے ہیں: ’اپنے موضوع کے بارے میں جانیں۔ جو لوگ کسی موضوع کے بارے میں سب سے زیادہ جانتے ہیں، اکثر اوقات وہی ان کے بارے میں سب سے تخلیقی آئیڈیا پیش کر سکتے ہیں۔‘

اپنا آئیڈیا پیش کرنے سے پہلے خود سے پوچھیں کہ اس میں آپ کو کیا خاص بات نظر آئی ہے؟ اگر آپ خود کو اس سوال کا جواب نہیں دے سکتے تو دوسرے بھی اس سے متاثر نہیں ہوں گے۔

اگر آپ زیادہ تجربہ کار نہیں ہیں اور آپ کو پوری طرح سے اندازہ نہیں ہے کہ آپ کا آئیڈیا کتنا کارآمد ہے تو کوئی سینیئر رفیقِ کار اس سلسلے میں آپ کو مشورہ دے سکتا ہے کہ اسے میٹنگ میں پیش کیا جائے یا نہیں۔

سیرین کے مطابق: ’آپ کے آئیڈیا کے بارے میں منتشر خیالات سے نہ صرف آئیڈیا متاثر ہو گا بلکہ آپ کی ساکھ بھی۔ اگر آپ سمجھتے ہیں کہ آپ کا آئیڈیا اچھا ہے لیکن اس بارے میں آپ کے پاس موجود معلومات ناکافی ہیں تو پہلے سے واضح کر دیں۔‘

اوسط پِچ: ’میرے خیال سے محکمۂ صحت میں دانتوں کے ڈاکٹروں کے بحران کے بارے میں کوئی خبر کرنی چاہیے۔‘

عمدہ پِچ: ’میرے خیال سے ہمیں ہنگری جانا چاہیے کیوں کہ ہزاروں برطانوی وہاں دانتوں کا علاج کروانے جا رہے ہیں۔ میں ہنگری میں دانتوں کے دو ڈاکٹروں کو جانتا ہوں جو انگریزی بول سکتے ہیں اور میرا پڑوسی اگلے ہفتے بوڈا پیسٹ جا رہا ہے۔‘

 

سٹاف کا سائن اِن

براہ کرم انتظار کریں اور ہمیں دیکھنے دیں کہ آپ بی بی سی کے اندرونی نیٹورک سے منسلک ہیں یا نہیں۔

معذرت، ہم تصدیق نہیں کر سکے کہ آپ بی بی سی کے اندرونی نیٹورک سے منسلک ہیں یا نہیں۔

  • پلیز، دیکھ لیں کہ آپ بی بی سی کے انردونی نیٹورک سے منسلک ہیں یا نہیں۔
  • براہ مہربانی، دیکھ لیں کہ آپ جس لِنک پر جانا چاہ رہے ہیں وہ درست ہے یا نہیں۔
بند کریں اور جاری رکھیں۔

بی بی سی کے نیٹورک پر آپ کی موجودگی کی تصدیق ہو گئی ہے۔

بند کریں اور جاری رکھیں۔