جان کیری وزیر خارجہ کے عہدے کے لیے نامزد

آخری وقت اشاعت:  ہفتہ 22 دسمبر 2012 ,‭ 19:13 GMT 00:13 PST

صدر اوباما نے کہا کہ جان کیری نے عالمی رہنماؤں کی ’عزت اور اعتماد‘ حاصل کیا ہے

امریکی صدر براک اوباما نے سینیٹر جان کیری کو امریکی وزیرخارجہ ہلیری کلنٹن کی جگہ لینے کے لیے نامزد کیا ہے۔

واضح رہے کہ وزیر خارجہ ہلیری کلنٹن صدر اوباما کے پہلے دورِ صدارت میں اس عہدے پر فائز رہنے کے بعد مستعفی ہو رہی ہیں۔

صدر اوباما نے کہا کہ جان کیری کو عالمی رہنماؤں کی ’عزت اور اعتماد‘ حاصل ہے۔

صدر اوباما نے کہا کہ سینیٹر جان کیری کو اس عہدے کے لیے تربیت کی ضرورت نہیں پڑے گی۔ صدر اوباما نے امید ظاہر کی کہ سینیٹ میں ان کی نامزدگی کی توثیق فوری ہو جائے گی۔

جان کیری سینیٹ کی خارجہ امور کی کمیٹی کے چیئرمین ہیں۔ وہ سنہ 2004 کی صدارتی دوڑ میں ڈیموکریٹ جماعت کے امیدوار تھے۔

جان کیری کی نامزدگی سے قبل اقوام متحدہ میں امریکی سفیر سوزن رائس کے اس عہدے پر فائز ہونے کے امکانات روشن تھے۔ تاہم پچھلے ہفتے انہوں نے بن غازی میں حملے میں چار امریکی سفارتکاروں کی ہلاکت پر تنقید ہونے پر اپنا نام واپس لے لیا تھا۔

تجزیہ کاروں کا کہنا ہے کہ جان کیری کی نامزدگی پر ری پبلکن جماعت کی جانب سے مخالفت کے امکانات کم ہیں۔

وزیر خارجہ کے عہدے پر فائز ہونے کے بعد شام میں جاری بحران، امریکی فوج کا افغانستان سے انخلا اور ایران کا ایٹمی پروگرام ان کی توجہ کا مرکز ہو گا۔

انہتر سالہ جان کیری کی نامزدگی کے اعلان پر ہلیری کلنٹن موجود نہیں تھیں کیونکہ وہ اب بھی بیمار ہیں۔

وزیرِ خارجہ کے علاوہ صدر اوباما وزیر دفاع اور سی آئی اے کے سربراہ کے لیے بھی نئے ناموں کا اعلان کریں گے۔

سینیٹر جان کیری ویت نام جنگ لڑ چکے ہیں اور 2004 کے صدارتی انتخابات میں وہ جارج بش سے ہار گئے تھے۔ وہ 2008 میں بھی وزیرِ خارجہ کے عہدے کے لیے امیدوار تھے لیکن ان کی جگہ ہلیری کلنٹن کو اس عہدے پر فائز کیا گیا تھا۔

واشنگٹن میں ہماری نامہ نگار کا کہنا ہے کہ کیری حالاتِ حاضرہ اور سفارتکاری کی دنیا میں نئے نہیں ہیں۔

انہوں نے کئی مواقع پر اور خاص طور پر افغانستان اور پاکستان میں اوباما انتظامیہ کی غیر سرکاری حیثیت میں مدد کی ہے۔

عہدہ ملنے کے بعد سینیٹر کیری کو ریاست میساچیوسٹس سے اپنی نشست خالی کرنی ہو گی اور اس نشست کو جیتنے کے لیے ڈیموکریٹ جماعت کو سخت مقابلے کا سامنا ہو گا۔

اسی بارے میں

متعلقہ عنوانات

BBC © 2014 بی بی سی دیگر سائٹوں پر شائع شدہ مواد کی ذمہ دار نہیں ہے

اس صفحہ کو بہتیرن طور پر دیکھنے کے لیے ایک نئے، اپ ٹو ڈیٹ براؤزر کا استعمال کیجیے جس میں سی ایس ایس یعنی سٹائل شیٹس کی سہولت موجود ہو۔ ویسے تو آپ اس صحفہ کو اپنے پرانے براؤزر میں بھی دیکھ سکتے ہیں مگر آپ گرافِکس کا پورا لطف نہیں اٹھا پائیں گے۔ اگر ممکن ہو تو، برائے مہربانی اپنے براؤزر کو اپ گریڈ کرنے یا سی ایس ایس استعمال کرنے کے بارے میں غور کریں۔