BBC navigation

میر علی میں ڈرون حملے، غیرملکیوں سمیت 7 ہلاک

آخری وقت اشاعت:  منگل 8 جنوری 2013 ,‭ 06:58 GMT 11:58 PST

نئے سال کے آغاز سے ہی پاکستان کے قبائلی علاقوں میں ڈرون حملوں میں تیزی دیکھی جا رہی ہے

پاکستان کے قبائلی علاقے شمالی وزیرستان میں امریکی ڈرون طیاروں کے میزائل حملوں میں دو غیر ملکیوں سمیت سات شدت پسند ہلاک ہوگئے ہیں۔

مقامی انتظامیہ کے مطابق یہ حملے پیر اور منگل کی درمیانی شب تحصیل میر علی کے دو دیہات عیسو خیل اور حیدرخیل میں ایک گھنٹے کے وقفے سے ہوئے۔

انتظامیہ کے ایک اہلکار نے بی بی سی کو بتایا کہ دونوں حملوں میں میزائلوں سے دو مکانات کو نشانہ بنایا گیا جس سے وہ تباہ ہوگئے۔

اہلکار کے مطابق یہ دونوں مکانات کافی عرصے سے شدت پسندوں کے زیرِ استعمال تھے۔

اہلکار کا یہ بھی کہنا تھا کہ حیدرخیل میں ہونے والے حملے میں چار افراد ہلاک اور تین زخمی ہوئے ہیں جبکہ عیسو خیل کے حملے میں تین افراد مارے گئے ہیں۔

مقامی انتظامیہ کے مطابق حیدرخیل میں ہونے والے حملے میں ہلاک ہونے والوں میں دو ازبک شدت پسند بھی شامل ہیں جبکہ عیسو خیل میں ہلاک ہونے والے تمام افراد مقامی تھے۔

خیال رہے کہ نئے سال کے آغاز سے ہی پاکستان کے قبائلی علاقوں میں ڈرون حملوں میں تیزی دیکھی جا رہی ہے اور سال کے پہلے ہی ہفتے میں تازہ حملوں کو ملا کر کل پانچ ڈرون حملے ہو چکے ہیں۔

تین جنوری کو امریکی ڈرون طیاروں نے جنوبی اور شمالی وزیرستان میں دو گاڑیوں کو نشانہ بنایا تھا جس میں طالبان کمانڈر ملا نذیر سمیت نو شدت پسند ہلاک ہوگئے تھے۔

اس کے بعد چھ جنوری کو جنوبی وزیرستان میں بوبڑ خیل کے پہاڑی علاقے میں کالعدم تحریک طالبان پاکستان کے حکیم اللہ محسود گروپ کے ایک تربیتی مرکز پر دو میزائل داغے گئے تھے جس میں آٹھ افراد ہلاک ہوئے تھے۔

خیال رہے کہ رواں ہفتے بھی پاکستان نے قبائلی علاقوں میں ڈرون حملوں کے خلاف احتجاج کیا ہے اور ماضی میں بھی وہ کئی بار باضابطہ طور پر امریکہ سے احتجاج کر چکا ہے۔

پاکستان کا کہنا ہے کہ یہ ڈرون حملے ملکی خودمختاری کے خلاف ہیں جبکہ امریکہ کہتا ہے کہ حملے شدت پسندوں کے خلاف جنگ میں ایک موثر ہتھیار ثابت ہو رہے ہیں اور ان کا قانونی اور اخلاقی جواز موجود ہے۔

اسی بارے میں

BBC © 2014 بی بی سی دیگر سائٹوں پر شائع شدہ مواد کی ذمہ دار نہیں ہے

اس صفحہ کو بہتیرن طور پر دیکھنے کے لیے ایک نئے، اپ ٹو ڈیٹ براؤزر کا استعمال کیجیے جس میں سی ایس ایس یعنی سٹائل شیٹس کی سہولت موجود ہو۔ ویسے تو آپ اس صحفہ کو اپنے پرانے براؤزر میں بھی دیکھ سکتے ہیں مگر آپ گرافِکس کا پورا لطف نہیں اٹھا پائیں گے۔ اگر ممکن ہو تو، برائے مہربانی اپنے براؤزر کو اپ گریڈ کرنے یا سی ایس ایس استعمال کرنے کے بارے میں غور کریں۔