BBC navigation

پاکستان میں دو عیدوں کی روایت برقرار

آخری وقت اشاعت:  اتوار 19 اگست 2012 ,‭ 19:11 GMT 00:11 PST

پاکستان میں ماضی میں بھی عیدالفطر ایک ساتھ منانے کے حوالے سے تنازع رہا ہے

پاکستان میں عید الفطر کا تہوار ایک بار پھر اختلاف کی نذر ہو گیا ہے۔ مرکزی اور صوبائی رویت ہلال تنظیم کے اجلاس نے ایک دوسرے کے برخلاف فیصلے سنائے۔

پاکستان کی مرکزی رویتِ ہلال کمیٹی کے سربراہ مفتی منیب الرحمان نے اعلان کیا ہے کہ ملک کے کسی بھی حصے میں شوال کا چاند نظر نہیں آیا اس لیے عید الفطر پیر یعنی بیس اگست کو ہو گی۔

دوسری جانب صوبہ خیبر پختونخوا کے سینیئر وزیر بشیر بلور نے اعلان کیا ہے کہ صوبے بھر میں عید الفطر کل یعنی اتوار کو منائی جائے گی۔

مفتی منیب الرحمان نے سنیچر کو کراچی میں مرکزی رویتِ ہلال کمیٹی کے اجلاس کی صدارت کی جبکہ رویت ہلال کی زونل کمیٹیوں کے اجلاس ان کے متعلقہ ہیڈ کوارٹرز میں ہوئے۔

مرکزی رویتِ ہلال کمیٹی کے سربراہ مفتی منیب الرحمان نے اجلاس کے بعد اعلان کیا کہ ملک کے کسی بھی حصے میں شوال کا چاند نظر نہیں آیا اس لیے عیدالفطر پیر یعنی بیس اگست کو ہو گی۔

دوسری جانب صوبہ خیبر پختونخوا کے سینیئر وزیر بشیر بلور نے اعلان کیا ہے کہ صوبے بھر میں عیدالفطر کل یعنی اتوار کو منائی جائے گی۔

بشیر بلور نے پشاور میں میڈیا سے بات کرتے ہوئے کہا کہ ایک مرتبہ پھر ثابت ہو گیا ہے کہ مرکزی رویت ہلال کمیٹی ہمارے صوبے کی شہادتوں کو نہیں مانتی۔

ان کا کہنا تھا کہ وفاقی رویت ہلال کمیٹی کے اجلاس میں ہمارے علماء کی شہادتوں کو تسلیم نہیں کیا گیا اور ان کی شہادتیں وصول کرنے سے پہلے ہی مرکزی رویت ہلال کمیٹی کا اجلاس ختم کر دیا گیا۔

انہوں نے اعلان کیا کہ صوبہ خیبر پختونخوا میں عید اتوار کو منائی جائے گی۔

واضح رہے کہ پاکستان میں ماضی میں بھی عیدالفطر ایک ساتھ منانے کے حوالے سے تنازع رہا ہے۔

اسی بارے میں

متعلقہ عنوانات

BBC © 2014 بی بی سی دیگر سائٹوں پر شائع شدہ مواد کی ذمہ دار نہیں ہے

اس صفحہ کو بہتیرن طور پر دیکھنے کے لیے ایک نئے، اپ ٹو ڈیٹ براؤزر کا استعمال کیجیے جس میں سی ایس ایس یعنی سٹائل شیٹس کی سہولت موجود ہو۔ ویسے تو آپ اس صحفہ کو اپنے پرانے براؤزر میں بھی دیکھ سکتے ہیں مگر آپ گرافِکس کا پورا لطف نہیں اٹھا پائیں گے۔ اگر ممکن ہو تو، برائے مہربانی اپنے براؤزر کو اپ گریڈ کرنے یا سی ایس ایس استعمال کرنے کے بارے میں غور کریں۔