BBC navigation

آنگ سانگ سوچی بھارت کے دورے پر

آخری وقت اشاعت:  منگل 13 نومبر 2012 ,‭ 01:47 GMT 06:47 PST

برما کی جمہوریت نواز رہنما آنگ سانگ سوچی کو پندرہ برس تک گھر میں نظر بند رکھا گیا تھا

برما کی جمہوریت نواز رہنما اور رکن پارلیمان آنگ سانگ سوچی اپنی رہائی کے بعد بھارت کا پہلا دورہ کر رہی ہیں۔

سوچی اپنے دورے کے دوران بھارت کے وزیر اعظم منموہن سنگھ سے ملاقات کرنے کے علاوہ بھارتی پارلیمان کا دورہ کریں گی۔

برما کی رہنما اپنے دورے کے دوران بھارت میں ایک لیکچر بھی دیں گی۔

آنگ سانگ سوچی بھارت کے شہر دلی میں واقع اس کالج بھی جائیں گی جہاں سنہ ساٹھ کی دہائی میں ان کی والدہ بھارت میں برما کی سیفر تھیں اور وہ وہاں زیرِ تعلیم تھیں۔

دریں اثناء امریکی صدر براک اوباما اس ماہ برما کا دورہ کریں گے جو کسی بھی امریکی صدر کا پہلا دورہ ہو گا۔

امریکی صدر اوباما برما کے صدر تھین سین کے علاوہ اپوزیشن لیڈر آن سانگ سوچی سے بھی ملاقات کریں گے۔

واضح رہے کہ آنگ سانگ سوچی کو گزشتہ دو دہائیوں کے دوران ان کے گھر نظر بند رکھا گیا اور سنہ دو ہزار دس کے آخر میں انہیں رہا کیا گیا۔

برما میں حالیہ اصلاحات کے بعد دو ماہ پہلے آنگ سانگ سوچی پارلیمان کی رکن منتخب ہوئی تھیں۔

چھیاسٹھ سالہ آنگ سانگ سوچی نے سنہ دو ہزار دس میں منعقد ہونے والے عام انتخابات کے بعد اپنی سیاسی جماعت نیشنل لیگ فار ڈیموکریسی کو سیاسی جماعت کے طور پر رجسٹر کروایا۔

برما کی فوجی حکومت نے گزشتہ انتخابات کے دوران آنگ سانگ سانچی پر انتخابات میں حصہ لینے پر پابندی عائد کی تھی جس کی وجہ سے ان کی جماعت نے ان انتخابات کا بائیکاٹ کیا تھا۔

سنہ دو ہزار دس میں میں برما میں بیس سال بعد انتخابات ہوئے تھے لیکن سوچی کی پارٹی اس میں حصہ نہیں لے سکی تھی۔ ملک میں بعض ایسے قوانین تھے جس کے تحت سوچی کی پارٹی انتخابات سے دور رہی تھی۔

برما کی حکومت نے حال ہی میں قوانین میں بعض تبدیلی کر کے سوچی کی پارٹی پر عائد پابندی کو ہٹا دیا تھا۔

سنہ انیس سو نوے میں سوچی کی پارٹی نے انتخابات میں حصہ لیا تھا اور بھاری اکثریت سے فتح حاصل کی تھی لیکن اس وقت کی حکومت نے ان نتائج کو قبول نہیں کیا تھا اور نہ ہی ان کی جماعت کو اقتدار سنبھالنے دیا تھا۔

اسی بارے میں

متعلقہ عنوانات

BBC © 2014 بی بی سی دیگر سائٹوں پر شائع شدہ مواد کی ذمہ دار نہیں ہے

اس صفحہ کو بہتیرن طور پر دیکھنے کے لیے ایک نئے، اپ ٹو ڈیٹ براؤزر کا استعمال کیجیے جس میں سی ایس ایس یعنی سٹائل شیٹس کی سہولت موجود ہو۔ ویسے تو آپ اس صحفہ کو اپنے پرانے براؤزر میں بھی دیکھ سکتے ہیں مگر آپ گرافِکس کا پورا لطف نہیں اٹھا پائیں گے۔ اگر ممکن ہو تو، برائے مہربانی اپنے براؤزر کو اپ گریڈ کرنے یا سی ایس ایس استعمال کرنے کے بارے میں غور کریں۔